بسم اللہ الرّحمن الرحیم

ذاتی تعارف (curriculum viate)

نام: فالح بن محمّد بن فالح الصغیّر۔

پیدائش: آپ  کیپیدائش  مملکت  سعودی عرب کی راجدھانی   ریاض کے  علاقے میں ایک مشہور ضلع زلفی میں سن ۱۳۷۶ھ میں ہوئی۔

آپ کے اساتذہ کرام:

آپ کے اساتذہ کرام میں سے چنددرج ذیل ہیں:

۱- فضیلۃ الشیخ عبد الرّزاق عفیفی رحمۃ اللہ علیہ۔

۲- فضیلۃ الشیخ عبد اللہ بن جبرین رحمۃ اللہ علیہ۔

۳- فضیلۃ الشیخ صالح الأطرم رحمۃ اللہ علیہ۔

۴- فضیلۃ الشیخ ڈاکٹرصالح بن فوزان الفوزان حفظہ اللہ۔

۵- فضیلۃ الشیخ عبداللہ رکبان حفظہ اللہ۔

۶- فضیلۃ الشیخ حسن بن مانع رحمۃ اللہ علیہ۔

۷- فضیلۃ الشیخ عبدالکریم اللاحم حفظہ اللہ۔

۸- فضیلۃ الشیخ احمد منصورحفظہ اللہ۔

علمی لیاقت:

ــسنّت نبوی اور اس کے علوم میں سن ۱۴۰۲ھ بمطابق ۱۹۸۲ء میں ماسٹر(ایمـاے) کیڈگریحاصلکی۔

ــسنّت نبوی اور اس کے علوم میں سن ۱۴۰۵ھ بمطابق ۱۹۸۵ء میںڈاکٹریٹ(پی۔ایچ۔ڈی) کیڈگریحاصلکی۔

علمی  رتبہ :  سن ۱۴۱۴ہجری سے سنت نبوی اور اس کے علوم میں پروفیسر ہیں۔

۔ڈاکٹریٹ(پی،ایچ،ڈی) کا رسالہ(Thesis):(مسند أبي يعلى الموصلي – من أوله إلى نهاية مسند أبي سعيد الخدري) تحقيق ودراسة.مسند ابویعلی موصلی کا ابتدائے کتاب سے مسند ابوسعیدخدری تک تحقیق ومطالعہ۔

۔ماسٹر (ایم۔اے) کا رسالہ(Thesis):(كتاب الغمّاز على اللمّاز في الأحاديث المشتهرة للشيخ نور الدين السمهودي) تحقيق ودراسة.

شیخ نورالدین سمہودی کی کتاب ’’ الغمّاز على اللمّاز في الأحاديث المشتهرة ‘‘کا تحقیق ومطالعہ۔

حالیہ عہدہ : رکن مجلس شوریٰ۔

سابقہ  اعمال منصبی:

-         سن ۱۴۰۶ہجری سے لے کرسن ۱۴۰۹ہجری تک ریاض کے اصول دین کالج میں وکیل(ریکٹر)  رہے۔

-         سن ۱۴۰۹ہجریسے لے کرسن ۱۴۱۵ہجری تک ریاض کے اصول دین کالج میں پرنسپل رہے۔

کانفرنس وسیمنار:

آپ نےاندرون   اور بیرون  ملک منعقد ہونے والے کئی سارے کانفرنسوں اور سیمناروں میں شرکت فرمایا ،جن میں سے بعض درج ذیل ہیں:

۱- سن ۱۴۲۵ہجری میں وزارت  برائےاسلامی امور کی جانب سے مدینہ منورہ میں منعقد سیمنار ’’سنت  نبوی اورسیرت نبوی کے تئیںمملکت سعودی عرب کا  اہتمام‘‘میں شرکت۔

۲- سن ۱۴۲۵ہجریمیں امام محمد بن سعود یونیورسٹی کی طرف سے  ریاض میں منعقد کردہ’’انسداددہشت گردی کانفرس ‘‘میں شرکت۔

۳- سن ۱۴۲۲ہجری میں شاہ خالد   یونیورسٹی، ابہا     میں\'\' شیخ ابن باز رحمہ اللہ کی حالات زندگی‘‘ کےبارے میں منعقد   سیمنار میں شرکت۔

۴- سن ۱۴۲۶ھ میں شہر ابہا میں منعقد  \'\'پانچویں قومی مذاکرات\'\' میں شرکت۔

سپروائزری،مناقشات  اورریسرچ وتحقیق (مقالات ومضامین)  کی تحکیم:

۱- آپ  نے سعودی عرب کی مختلف یونیورسٹیوں اور گرلزکالجوںمیں۶۰ سے زائد ایم۔اے اور  پی۔ایچ۔ڈی  کےمتعدد علمی  رسالوں(تھیسز) کی سپروائزری  اور مناقشہ کیا۔

۲- آپ نے سعودی عرب اور بعض خلیجی وعرب ممالک  کی مختلف یونیورسٹیوں میں تحقیقی  مقالات وریسرچ، نیز    تحکیم شدہ مجلات اور کانفرنسوں  وغیرہ  کے لیے  حکم کا فریضہ انجام دیا۔

علمی تالیفات ونگارشات:

 آپ کیعلمی تالیفات، ماسٹر اور ڈاکٹریٹ کے رسالے کے علاوہ پچاس سے زیادہ ہیں ،ان میں سے بعض درج ذیل ہیں:

۱- الترغیب فی الدعاء(دعا کی ترغیب)، تالیف:حافظ عبد الغنی المقدسی  الحنبلی رحمۃ اللہ علیہ،تحقیق ودراسہ۔

۲-كتاب الديات في الشريعة الإسلامية وتطبيقاتها في المملكة العربية السعودية.

.۳- من فقه السنة(دوجلدوں میں)۔

۴- دروس في الحقوق الواجبة على المسلم .(مسلمان پر واجب حقوق سے متعلق اسباق )۔

۵-أسئلة النساء للنبي صلى الله عليه وسلم .(نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے عورتوں کی طرف سے پوچھے گئے سوالات)۔

۶۔هدي النبي صلى الله عليه وسلم في رمضان .(رمضان میں نبی صلی اللہ علیہ وسلم کا طریقہ)۔

۷۔معالم التوحيد في الحج .(حج میں توحید کے آثارونشانات)۔

۸۔قواعد منهجية في طلب العلم.(طلب ِ علم کے متعلق منظّم قواعد)

۹۔قواعد منهجية في الدعوة إلى الله.(دعوت الی اللہ کے متعلق منظّم قواعد)۔

۱۰۔قواعد منهجية في فهم السنة والعمل بها.(سنت کی فہم اور اس پرعمل کے متعلق منظّم قواعد)۔

۱۱۔قواعد منهجية في التربية النبوية.(نبوی تربیت  کے متعلق منظّم قواعد)۔

۱۲۔حياة السعداء:دراسة نفسية مستنبطة من القرآن والسنة.(سعادت مندوں کی زندگی:قرآن وسنت سے مستنبط نفسیاتی مطالعہ)

۱۳۔الاعلام في المفطرات۔

۱۴۔من فقه الحج حِكم وأحكام.۔

ریسرچ  وتحقیق :

 آپ کےمتعدد ریسرچ  وتحقیقی مضامین ہیں،ان میں سے بعض یہ ہیں:

۱- مضمون(الإسلام و سماحته)یعنی اسلام اور اس کی رواداری۔

۲- مضمون (وقفات مع المستشرقين و موقفهم من السنة النبوية)یعنی’’مستشرقین کے ساتھ وقفات اور سنت نبوی کے سلسلے میں ان کے رویے‘‘۔

۳۔مضمون(منهج سماحة الشيخ الإمام عبد العزيز بن باز – رحمه الله – في التعامل مع ولاة الأمر) یعنی حکمرانوں کے ساتھ تعامل میں سماحۃ الشیخ ابن باز رحمۃ اللہ علیہ  کا طریقہ کار۔

۴- مضمون(فقه التعامل مع الخلاف و المخالف)اختلاف ومخالفین کے ساتھ تعامل کی فقہ۔

۳- (المرأة في حياة النبي صلى الله عليه وسلم)حیات نبوی صلی اللہ علیہ وسلم میں عورت  کا مقام۔

اور اس کے علاوہ بہت سارے ریسرچ  وتحقیقی مضامین ہیں۔

میڈیا میں شرکت:
بہت سارے صوتی ،تصویریاور پرنٹ ذرائع ابلاغ   میں شرکت فرمایا،اور ریاض ریڈیو،اور قرآن کریم ریڈیو،اور سعودی ٹیلی ویزن کے چنیل ون  وغیرہ پر بہت سارے پروگرام پیش کیے۔

آپ کے ایمیل کا پتہ:عنوان البريد الإلكتروني هذا محمي من روبوتات السبام. يجب عليك تفعيل الجافاسكربت لرؤيته.">عنوان البريد الإلكتروني هذا محمي من روبوتات السبام. يجب عليك تفعيل الجافاسكربت لرؤيته.

 

 

 

 

 

 

أضف تعليق

كود امني
تحديث